پانڈیا، دھونی کی محنت، ہندستان کی۲۶؍ رنزسے جیت

ہندوستان نے ٹاس جیت کر پہلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا اور آسٹریلیا کو ۲۸۱؍ رنوں کا ہدف دیا تھا،جس کو میزبا ن ٹیم نہ بنا سکی

چنئی:پانچ میچوں کی یک روزہ سیریز کے پہلے میچ میں ہندوستان نے آسٹریلیا کو ۲۶؍ رنز سے شکست دے کر برتری حاصل کرلی ہے۔ آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا (83) اور سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی (79) کی شاندارنصف سنچریوں سے ہندوستان نے پانچ وکٹ پر 87 رن کی نازک صورت حال سے ابھرتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف پہلے ون ڈے میں اتوار کو 50 اوور میں سات وکٹ پر 281 رن کا قابل مقابلہ اسکور بنالیا۔ ہندوستان نے ٹاس جیت کر پہلے بازی کرنے کا فیصلہ کیا لیکن اس کی ابتدا اچھی نہیں رہی اور چھ اوور تک اس نے اپنے تین وکٹ 11 رن پر گنوادیئے۔ ہندوستان نے پھر 87 رن تک پہنچتے پہنچتے پانچ وکٹ گنوادیئے لیکن اسکے بعد پانڈیا نے جارحانہ انداز میں کھیلتے ہوئے نصف سنچری بنائی جبکہ دھونی نے ابتدا میں محتاط انداز میں کھیلتے ہوئے اپنی نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد پھر وہ اپنے لے میں واپس آئے۔پانڈیا نے محض 66 گیندوں میں 86 رن بنائے جس میں  پانچ چوکے اور پانچ چھکے لگائے۔ دھونی اپنی نصف سنچری تک محتاط انداز میں کھیلتے رہے لیکن اس کے بعد انہوں نے بھی اپنے پرانے تیور دکھائے۔ دھونی نے 88 گیندوں پر 79 بنائے جس میں چار چوکے اور دو چھکے لگائے۔ تیز گیند باز بھونیشور کمار نے 30 گیندوں پر پانچ چوکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 32 رن بنائے۔ پانڈیا اور دھونی نے چھٹے وکٹ کے لئے 118 رن کی ساجھیداری کی جبکہ دھونی اور بھونیشور نے ساتویں وکٹ کے لئے 72 بنائے۔اوپنر شیکھر دھون کے پہلے تین ون ڈے سے ہٹ جانے کےبعد اوپننگ کےلئے لائے گئے اجنکیا رہانے محض پانچ رن بنانے کے بعدچوتھے اوور میں ناتھن کولٹن نائل کا شکار بن گئے۔ سری لنکا میں آخری دو میچوں میں سنچری لگانے والے کپتان وراٹ کوہلی اس بار کھاتہ کھولے بنا ہی کولٹ نائل کی گیند پر گلین میکسویل کو کیچ تھما بیٹھے۔کولٹر نائل نے اپنے چھٹے اوور کی پہلی گیند پر وراٹ کا قیمتی وکٹ لینے کےبعد تیسری گیند پر منیش پانڈے کو میتھیو ویڈ کے ہاتھوں کیچ کرادیا۔ منیش کا بھی کھاتہ نہیں کھلا۔ فارم میں چل رہے اوپنر روہت شرما 44 گیندوں میں تین چوکوں کی مدد سے 2 رن بنانے کے بعد مارکس اسٹونس کا شکار بن گئے۔ روہت کا کیچ کولٹر نائل نے لپکا اور ان کا وکٹ 64 اسکور پر گرا۔کیدار جادھو نے 54 گیندوں میں پانچ چوکوں کی مدد سے 40 رن بنائے۔ اسٹونس نے انہیں اپنا دوسرا شکار بنایا۔ پانچواں وکٹ 87 رن کے اسکور پرگرا۔ اس وقت ٹیم انڈیا کی حالت بہت ہی نازک لگ رہی تھی اور 150 رن تک پہنچنا بھی مشکل نظر آرہا تھا۔ایسے نازک موقع پر دھونی نے زبردست قوت ارادی اور پانڈیا نے زبردست جارحانہ انداز کا مظاہرہ کیا۔ پانڈیا نے اپنے 50 رن 48 گیندوں میں تین چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے پورے کئے۔ دھونی دوسرے کنارے پر ٹیم کو سنبھالے رہے اور پانڈیا کو اسٹرائک دیتے رہے۔پانڈیا نے اپنے 50 رن پورے کرنے کےبعداگلے 33 رن میں تین چھکے اور دو چوکے لگائے۔ پانڈیا کی اس خطرناک اننگ کا خاتمہ لیگ اسپنر ایڈم جمپا نے کیا۔ پانڈیا کا کیچ جمیس فاکنر نے لیا۔ پانڈیا کا وکٹ جب گرا تو ہندوستان کا اسکور 41 ویں اوور میں 205 رن پر پہنچ چکا تھا۔ پانڈیا کا ون ڈے میں اب تک کا یہ سب سے شاندار اسکور ہے اور ان کی تیسری نصف سنچری ہے۔