اسپین کےالحمبارہ محل میں۵؍ سو سال بعد اذان

 میڈرڈ:اسپین کے گرینڈا میں واقعہ الحمبارہ محل میں اذان دیتے ہوئے ایک شخص کو ویڈیو سوشیل میڈیا پر وائیرل ہورہا ہے۔موز الناس جو کہ شامی نژاد ہے ویڈیومیں اذان دیتے ہوئے دیکھائی دے رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مجھے ایسا محسوس ہورہا ہے کہ اس پیالس کی دیواریں ’’ اذان سننے کے لئے‘‘ بے چین ہیں۔گرینڈا میں مسلم حکمرانوں نے الحمبارہ محل  کی تعمیر کی تھی۔۷۱۱؍میں مسلمان یہا ں آئے اور ۸۰۰؍ برسوں تک حکمرانی کی۔گرینڈا۱۴۹۲ءمیں عیسائیوں کے قبضے میںآگیا۔ مسلمانوں کو جبری طور پر یاتو عیسائی بنایاگیا یا انہیں اذیتیں دی گئی۔بظاہر کئیلوگوں نے عیسائیت کوقبول تو کیامگر چھپ چھپ کر اپنی عبادتیں بھی کیاکرتے تھے۔گرینڈا میں۱۵۰۱ء سرکاری طور پر کوئی مسلمان باقی نہیں رہا تھا۔