ٹرین میں سفر کے دوران اب سونے پر بھی پابندی

ہندوستانی ریلوے کے اس نئے قانون سے اڑ جائے گی آپ کی نیند، بیٹھنے والوں کو ملے گی سہولت

نئی دہلی : ہندوستانی ریلوے کے ایک نئے سرکلر کے مطابق ٹرینوں میں اب مسافر رات۱۰؍بجے سے پہلے اور صبح۶؍بجے کے بعد نہیں سوسکیں گے۔ اس بات کو یقینی بنانے کیلئے ایسا کیا گیا کہ آ ر اے سی ٹکٹ پر سفر کرنے والوں کو زیادہ وقت تک بیٹھنے کی سہولت دستیاب ہوسکے ۔ علاوہ ازیں اوپر کی سیٹ والوں کو بھی زیادہ دیر تک بیٹھنے کا موقع مل سکے۔پہلے مسافروں کے پاس رات۹؍ بجے تک سونے کا آپشن تھا ۔ یہ سرکلر بورڈ ریلوے بورڈ کے رکن اور مارکیٹنگ ڈائریکٹر وکرم سنگھ کے ذریعہ جاری کیا گیا ہے۔ سرکلر کے مطابق ریزرو ڈبوں میں مسافروں کو رات۱۰؍ بجے سے صبح۶؍ بجے تک سونے کی سہولت دی جاتی ہے اور باقی اوقات میں یاتریوں کو بیٹھنے کی سہولت فراہم کی ہے۔ دن کے وقت میں آر اے سی ٹکٹ والے مسافروں اور سائیڈ اپر سیٹ والے مسافر لوور برتھ پر بیٹھ سکتے ہیں۔اس سرکلر میں مزید کہاگیا ہے کہ سائیڈ اپر برتھ بک کرنےوالے مسافر رات ۱۰؍بجے سے صبح ۶؍بجے تک لوور برتھ پر بیٹھنے کا مطالبہ نہیں کرسکتے ہیں۔ سرکلر کے مطابق سونے کے وقت میں رات۱۰؍ بجے سے صبح ۶؍بجے تک ہی مسافر سو سکتے ہیں ۔ سرکلر میں مسافروں سے ایک دوسرے کا خیال رکھنے کی بھی اپیل کی گئی ہے۔ اس میں لکھا ہے کہ مسافروں سے درخواست ہے کہ وہ بیمار ، معذور اور حاملہ خواتین کو اگر مقررہ وقت سے زیادہ سونا ہے تو ان کی مدد کی جائے۔ہندوستانی ریلوے کے ترجمان انل کمار سکسینہ نے  بتایا کہ ایسا اس بات کو یقینی بنانے کیلئے کیا گیا ہے کہ آر اے سی کے تحت ٹکٹ بک کرنے والے مسافروں کو زیادہ وقت تک بیٹھنے کی جگہ مل سکے۔ مسافروں سے کہا گیا ہے کہ وہ دن کے وقت میں نہ سوئیں تاکہ دیگر مسافروں کو بیٹھنے کی جگہ مل سکے۔