مختار عباس نقوی کی بہن فرحت نقوی کو اغوا کرنے کی کوشش

بریلی : اترپردیش کے بریلی شہر میں مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کی ہمشیرہ فرحت نقوی کے ساتھ گالی گوچ اور دھمکی دینے کا معاملہ پیش آیا ہے اور انہوں نے شکایت کی ہے کہ انہیں اغوا کرنے کی بھی کوشش کی گئی۔ اطلاعات کے مطابق فرحت کا نامعلوم بدمعاشوں نے کافی دور تک تعاقب کیا ، گالی گلوچ کی ، جان سے مارنے کی دھمکی دی اور پھر فرار ہوگئے ۔ فرحت کی شکایت پر پولیس نے شکایت درج کرلی ہے اور معاملہ کی تفتیش شروع کردی گئی ہے۔فرحت نقوی کا کہنا ہے کہ پہلے بھی انہیں اس طرح کی دھمکیاں مل چکی ہیں ۔ خیال رہے کہ فرحت نقوی میرا حق فائونڈیشن نام کی ایک این جی او چلاتی ہیں ، جو طلاق متاثرہ خواتین کے حقوق کی لڑائی لڑتی ہے۔ فرحت نقوی پولیس لائن میں واقع کنبہ مشاورتی سینٹر گئی تھیں ۔ جب وہ وہاں سے باہر نکلیں اور پھر آٹو سے جانے لگیں تو کچھ نامعلوم کار سواروں نے ان کا تعاقب کیا ۔ فرحت جیسے ہی خاتون پولیس تھانہ کے رکیں تو کار سواران کے ساتھ گالی گلوچ کرنے لگے اور جان سے مارنے کی دھمکی دینے  کے ساتھ اغوا  کرنے کی کوشش کی لیکن  بعد میں فرار ہوگئے ۔واقعہ کے بعد پولیس نے موقع پر پہنچ کر چوکی کی سی سی ٹی کو کھنگالنے کی کوشش کی ، مگر اس وقت بجلی نہیں ہونے کی وجہ سے کوئی بھی ریکارڈنگ نہیں ہوسکی تھی۔ پولیس نے جلد ہی نامعلوم بدمعاشوں کو گرفتار کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔